Ghazal

Ghazal

اٹھو! اب ظلم کی سیاہ رات مٹا دو
اک بار پھر وہی نعرہ تکبیر لگا دو
خالد کی یلغار بن کے برس جاو کفر پہ
بحرظلمات میں پھر گھوڑے دوڑا دو
اے خدا کےسیپاہیو! یہ خام خیالی کب تک
اٹھو! اور باطل کے ایوانوں میں ہلچل مچا دو
غیرت کو جگاو اے جوانان مسلم اب تو
ایوبی و غزنوی و بن قاسم کی جھلک دکھا دو
قوم کے میر جعفروں کو ابھی سے پکڑ لو
عدل سے محروم ان عدالتوں کو جلا دو
مظلوم کی آہ جسے پار نہ کر سکے
اس محل کی ہر اک دیوار گرا دو
قوم کو لوٹنے والے چوروں غداروں کو
اب کسی چوراہے میں الٹا لٹکا دو
کب تلک یوں ظلم سہتے رہو گے
شاہین
اٹھو اور اب زنجیر عدل ہلا دو

Advertisements

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s