Ghazal

Kashmir

بھاری ہے ہر اک ستم پہ حوصلہ کشمیر کا
اب تو منزل پر رکے گا قافلہ کشمیر کا
دیکھنا اک دن ہوں گے انشا ء اللہ کامیاب
روز کم ہوتا ہے کب سے فاصلہ کشمیر کا
آنکھ میری تو چھلکنے لگتی ہے اے ہم نشیں
جب ہو جاتا ہے کہیں بھی تذکرہ کشمیر کا
ہم کو کوئی بھی الگ کر ہی نہیں سکتا کہ
کچھ ہے پاکستاں سے ایسا واسطہ کشمیر کا
جائوں اب میں کس طرف سے دیکھنے جنت شا ہیں
لہو میں ڈوبا ہوا ہے راستہ کشمیر کا

Advertisements

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s